ذیابیطس کی احتیاط کے ساتھ ورزش کرنا

اگر آپ کچھ عرصے سے چاق و چوبند نہیں رہے ہیں، تو اپنی صحت کی نگہداشت والی ٹیم سے مشورہ کریں کہ آپ کیلئے کونسی ورزش صحیح ہے۔ ہو سکتا ہےکہ جو ورزش آپ کرتےہوں ذیابیطس کی کچھ پیچیدگیاں اس ورزش میں تبدیلی کا باعث بن جائیں، جیسےکہ ہائی بلڈ پریشر، پیرکے السر، یا آنکھ کا نقصان۔

ذیابیطس میں مبتلا افرادکو اپنے بلڈ گلوکوز کے درجات کو ہدف کی حد میں رکھنےکی ضرورت ہوتی ہے اس لئے ان کوصحت مند وزن لازماً توازن میں رکھنا ہے۔ وزن میں کمی اور طرز زندگی میں تبدیلیاں بلڈ گلوکوز کے کنٹرول کو متاثر کر سکتے ہیں۔ بلڈ گلوکوز کے درجے میں کمی کے خوف سے اپنے آپ کو جسمانی طور پر چاق وچوبند رہنے سے مت روکیں، لیکن آپ کے جسم میں جو بھی تبدیلیاں ہو رہی ہیں ان پر توجہ ضرور دیں۔ اپنی صحت کی نگہداشت والی ٹیم سے اپنی پیش قدمی پر نظر رکھنے کیلئے اپنی بلڈ گلوکوز کو ٹیسٹ کرنے کے اوقات کے بارے میں مشورہ کریں۔ ہو سکتا ہے کہ آپ کی ذیابیطس کی دواؤں پر نظر ثانی کی ضرورت ہو۔

اپنی ورزش سے پہلے، دوران اور کافی گھنٹوں بعد بھی اپنی بلڈ گلوکوز کا یہ جاننےکیلئے جائزہ لیں کہ ورزش آپ کے بلڈ گلوکوز کے درجات پر کیسے اثر انداز ہوتی ہے۔ بلڈ گلوکوز کے درجے میں کمی (ہائیپوگلائسیمیا) کا علاج کرنےکیلئے تیزی سےکام کرنے والےکاربوہائیڈریٹ کی کوئی قسم اپنے ساتھ رکھیں۔ سب سے عمدہ انتخاب گلوکوز کی گولیاں ہیں، تاہم Life Savers®بھی مدد گار ثابت ہوں گی۔

 MedicAlert® braceletجب آپ ورزش کرتے ہیں، تو آرام دہ، اچھے طریقے سے فٹ ہونے والے جوتے پہنیں۔ اپنا MedicAlert® کڑا یا ہار ضرور پہنیں۔
ذیابیطس کی کچھ دوائیں وزن میں اضافےکا سبب بن سکتی ہیں۔ اگر طرز زندگی میں تبدیلیوں کی وجہ سے کوئی نتائج سامنے نہیں آ رہے، تو اپنی صحت کی نگہداشت کی ٹیم سے وزن قابو میں رکھنے کے دیگر انتخابات کے بارے میں مشورہ کریں۔

یاد رکھیں …

ہر فردکے جسم کا اپنا سائز اور بناوٹ ہوتی ہے۔ اپنے بارے میں اور طرز زندگی میں جو تبدیلیاں آپ کرتے ہیں ان کے بارے میں اچھا محسوس کریں۔ ایک وقت میں ایک قدم اٹھاتے ہوئے تبدیلی کریں۔ وہ پہلا قدم آج ہی اٹھائیں!

مزید معلومات حاصل کریں: